Total Pages Published شائع شدہ صفحات


Best Viewed Using Jameel Noori Nastaleeq - Please Click "How to Enjoy this Web Book"

Best Viewed Using Jameel Noori Nastaleeq - Please Click  "How to Enjoy this Web Book"
How to Enjoy this Web Book - Click Above ... اس ویب کتاب سے لطف کیسے اٹھائیں - اوپر کلک کریں

Amazon in association with JUSTUJU presents

English Translations

Webfetti.com

Please Click above for Akhgar Poetry in English

Wednesday, June 3, 2009

Gulkaree e Dil Deed kai Qabil hee Naheen Hai


گل کاری ء دل دید کے قابل ہی نہیں ہے




video



گُل کاریِ دل، دید کے قابل ہی نہیں ہے

اشکوں میں ابھی خون تو شامل ہی نہیں ہے


اک آبلہ ہے سینے میں اب دل ہی نہیں ہے

یا سوزشِ غم ضبط کے قابل ہی نہیں ہے


ممکن ہے کسی موجِ بلا سے ہو برآمد

تاحدِّ نظر تو کوئی ساحل ہی نہیں ہے


غافل ہو تو فرمائیں وہ یاد آنے کی زحمت

دل یاد سے ان کی کبھی غافل ہی نہیں ہے


آسودۂ گرداب نہ سمجھو مجھے یارو

اب تک مجھے اندازۂ ساحل ہی نہیں ہے


پابندیِ آدابِ جنوں اُٹھ گئی شاید

زندان میں کوئی شورِ سلاسل ہی نہیں ہے


مائل بہ ستم ہو کبھی مائل بہ کرم ہو

یہ کیا کہ مری سمت وہ مائل ہی نہیں ہے


طوُفان میں جس کے لیے رقصاں ہے سفینہ

وہ بہرِ تماشا سرِ ساحل ہی نہیں ہے


دل ترکِ تمنّا پہ بھی مائل نہیں اخگرؔ

اور عرضِ تمنّا کا تو قائل ہی نہیں ہے


No comments:

Site Design and Content Management by: Justuju Media

Site Design and Content Management by: Justuju Media
Literary Agents & Biographers: The Legend of Akhgars Project.- Click Logo for more OR eMail: Justujumedia@gmail.com